دنیا میں رہنے والوں کیلئے تشویشناک خبر آگئی ، سائنسدانوں نےخبردار کردیا

نیویارک(نیوز ڈیسک) موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث دنیا کا درجہ حرارت تیزی کے ساتھ بڑھتا جا رہا ہے اور ماہرین اس حوالے سے انتہائی خوفناک پیش گوئیاں کر رہے ہیں۔ نیوز ویک کی رپورٹ کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر یہ تبدیلیاں اسی رفتار سے جاری رہیں تو جلد دنیا انسان کے رہنے کے قابل نہیں رہے گی۔ دنیا کا درجہ حرارت اس قدر تیزی سے بڑھ رہا ہے کہ رواں سال دیگر کئی مہینوں کی طرح ماہ جولائی بھی تاریخ کا گرم ترین مہینہ تھا۔ گزشتہ ماہ اس قدر گرمی پڑی کہ عراقی حکومت نے کئی روز کے لیے پورے ملک میں چھٹیاں کر دیں اور کویت میں بھی درجہ حرارت 54ڈگری سینٹی گریڈ کی ریکارڈ سطح پر جا پہنچا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ”1880ءسے دنیا کے موسم کا ریکارڈ محفوظ کرنا شروع کیا گیا تھا۔ تب سے آج تک کے محفوظ ریکارڈ کے مطابق رواں سال جولائی کا مہینہ دستیاب انسانی تاریخ کا گرم ترین مہینہ تھا۔وہ آدمی جو مسلسل 40 سال تک ایک غار میں رہتا رہا، بغیر بجلی پانی کے زندگی کیسی تھی اور اتنا عرصہ زندہ کیسے رہا؟ ایسی کہانی جو آپ کو بھی سوچ میں ڈال دے گی ناسا کے ریکارڈ کے مطابق 1951ءسے 1980ءتک جولائی کے مہینے میں درجہ حرارت کی جواوسط تھی رواں سال درجہ حرارت اس سے 0.84ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ تھا۔ اگر 1880ءسے آج تک کے ریکارڈ کی اوسط کے حوالے سے دیکھا جائے تو رواں سال کے ماہ جولائی میں 0.11ڈگری سینٹی گریڈ زیادہ گرمی پڑی۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ”درجہ حرارت میں اس قدر اضافہ صرف موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے نہیں بلکہ ایل نینو(El Nino)کا عمل بھی اس کی ایک وجہ ہے۔اس عمل کے تحت گرم پانی بحرالکاہل میں پھیلتا ہے جس سے دنیا کے درجہ حرارت میں اضافہ ہوتا ہے۔2016ءکے تمام مہینے پے درپے تاریخ کے گرم ترین مہینے قرار پا رہے ہیں جس سے یہ خدشہ پیدا ہو گیا ہے کہ 2016ءکا پورا سال ہی تاریخ کا گرم ترین سال ہو گا۔
شئیر کریں

Facebook Comments

مزید

لوگ سوتے کیوں ہیں؟
خطروں کے کھلاڑیوں کا اٹھارہ سو میٹر رسی پر چل کر نیا ریکارڈ، تعلق کس ملک سے ؟ جانئے
ایک پلیٹ بریانی اور 100روپے کیلئے 42 بسیں نذرِ آتش
دنیا کی پراسرار ترین چیز ’’ گیدڑ سنگھی ‘‘حقیقت ہے یا افسانہ ؟ جانئے
مکان کی لالچ میں سینکڑوں جوڑے طلاق کیلئے رضامند ہو گئے
دن کو پولیس کی نوکری کرنیوالی یہ خاتون رات میں کیا کام کرتی ہے؟ جان کر آپ بھی حیران رہ جائیں گے