اب موجیں ہی موجیں!گوادر میں سرمایہ کاری کرنیوالوں کیلئے بڑی خبر آگئی

aaa

کراچی( نیوز ڈیسک ) چائنا اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی( سی او پی ایچ سی) کے وائس جنرل منیجر پیٹر ہو نے کہاہے کہ گوادر بندرگاہ میں 2260ایکٹر رقبے پر مشتمل فری زون بنایا جارہاہے۔ ابتدائی فری زون جو 80ایکٹر زمین پر محیط ہے چین کی کمپنیوں نے حاصل کر لی ہے جو مچھلیوں کی پروسیسنگ،ماربل کی کٹنگ، پیٹروکیمیکلز سمیت دیگر کاروبار کے لیے مختص کی گئی ہے۔یہ بات انہوں نے انڈینٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان(آئی اے او پی) کے سابق چیئرمین اوربزنس مین پینل کی ایف بی آر لائژن کمیٹی کے چیئرمین فیاض مگوں کی سربراہی میں گوادر بندرگاہ کا دورہ کرنے والے وفدکے ساتھ اجلاس سے خطاب میں کہی۔وفد میں گودادر بندرگاہ اور فری زون میں سرمایہ کاری کرنے والے چین کے سرمایہ کار بھی شامل تھے۔ چائنا اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی کے وائس جنرل منیجر پیٹر ہو نے اجلاس کے شرکاء کو بتایاکہ گوادر فری زون23سال کے عرصے تک مکمل طور پر ٹیکس فری ہوگا جبکہ سرمایہ کاروں کو زمین 99سال کی لیز پر دی جائے گینیز ایسٹ بے ایکسپریس وے،گوادر سے ملک بھر کے لیے روڈ نیٹ کی تعمیر،300میگا واٹ پاور پلانٹ، تازہ پانی کا ٹریٹمنٹ پلانٹ،ایل این جی ٹرمینل و پائپ لائن، پاک چائنا ٹیکنیکل ووکیشنل انسٹی ٹیوٹ، بزنس سینٹرز اور عالمی معیار کا نمائش سینٹر اس میگا پروجیکٹ کو اسٹیٹ آف دی آرٹ بنا دے گا۔اجلاس کے دوران انڈینٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان(آئی اے پی) کے سابق چیئرمین ا وربزنس مین پینل کی ایف بی آر کی لائژن کمیٹی کے چیئرمین سابق فیاض مگوں نے کہاکہ چائنا اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی لمیٹڈ( سی او پی ایچ سی) کو اس میگا منصوبے سے فوائد حاصل کر نے اور پاکستان کی اقتصادی ترقی میں بھرپور کردار ادا کرنے کے لیے زیادہ سے زیادہ پاکستانی سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کی جانب توجہ دے۔پاکستانی برآمدکنندگان کو بھی گوادر فری زون میں زمین حاصل کرنی چاہیے۔ انہوں نے چائنا پاکستان اقتصادی راہداری ( سی پیک ) منصوبے کے حوالے سے سیکورٹی انتظامات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیکورٹی فورسز نے گوادر کو حفاظتی لحاظ سے محفوط بنا کر سی پیک منصوبے کو کامیاب سے ہمکنار کرنے کے لیے تمام تر توجہ مرکوز کی ہوئی ہے جس سے غیر ملکی سرمایہ کار بلاخوف و خطر پاکستان میں سرمایہ کاری کی جانب راغب ہوں گے۔آئی اے او پی کے وفد نے گوادر بندرگاہ کے ڈائریکٹرجنرل عبدالرزاق درانی سے بھی ملاقات کی جنہوں نے اس میگا پروجیکٹ کے بارے میں مفصل بریفنگ دی۔اس موقع پر ثاقب فیاض مگوں نے کہاکہ گوادر میگا پروجیکٹ کی پالیسیاں وضع کرتے وقت حکومت کو پاکستان بھر کے اسٹیک ہولڈرز، صنعتکاروں اور سرمایہ کاروں کی باہمی مشاورت سے اُن کے مفادات کا ضرور خیال رکھنا چاہیے ۔انہوں نے گوادر میگا پروجیکٹ کو ایک بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہاکہ پاکستان کے معاشی مرکز میں واقع یہ منصوبہ پاک چائنا دوستی کا بہترین نمونہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پاک آرمی کے محفوظ پاکستان کے عزم کی وجہ سے دشمن کی تمام تر منفی کوششیں اور ناپاک عزائم ناکام ہو چکے ہیں۔ پاک آرمی فول پروف سیکیورٹی فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ گوادر میگا پروجیکٹ کے ہر پہلو پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے تاکہ اس منصوبے کو سرمایہ کاری کے لیے محفوظ تر بنایا جاسکے۔

Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedintumblrmail

مزید

18 جنرل قمر جاوید باجوہ نئےآرمی چیف مقرر
nirma طویل وقفے کے بعد نرماکا اپنے کیرئیر بارے حیران کن فیصلہ
32 وزیراعلی خیبر پختونخوا کا واپسی کا حکم، کارکنان بھی مایوس ،وجہ کیابنی ؟ جانئے
96 لیگی رہنما نہال ہاشمی کے بیان پر حکومت کافوری ردعمل سامنے آگیا
gang-rape مسلم لیگی رکن اسمبلی کے بیٹے پر خاتون کے ریپ کا مقدمہ
13 جاوید ہاشمی کا بیان۔۔۔ ماروی میمن نے بڑے راز سے پردہ چاک کردیا